nazar e bad, nazar bad ka rohani ilaj

کیا نظر بد سے نفع اور نقصان ممکن ہے

کیا نظر بد سے نفع اور نقصان ممکن ہے

ایک بہت ہی اہم بات جو اکثر لوگوں کے ذہنوں میں گونجتا ہے کہ نفع اور نقصان اللہ کی جانب سے ہوتا ہے تو اس بات کی وضاحت ہم کر دیتے ہیں کہ بھی ہمارے نفع یا نقصان کے لیے کوئی تدبیر کرتا ہے تو اس کے بعد “امرربی” یعنی اللہ کا فیصلہ ہوتا ہے کہ ہم کو کتنا نفع پہنچے یا نقصان؟ پھر جو اللہ تعالیٰ فیصلہ فرماتے ہیں وہی عملی طور پر ہوتا ہے۔ اب اس بات کو اس طرح سمجھیں کہ جب کوئی شخص ہمیں نظر بد لگاتا ہے تو کیا اس نظر بد کے اثرات ہمیں پہنچیں گے کہ نہیں ۔ اس کا جواب یہ ہے کہ جب تک اللہ تعالیٰ نہیں چاہیں گے وہ اثرات نقصان نہیں پہنچا سکیں گے۔ اس کی کچھ صورتیں ہو سکتی ہیں ان کو سمجھ لیں۔

کیا نظر بد کی علامات اور اس کی پہچان ممکن ہے؟

1-ایک صورت یہ کہ جب بھی نظربد کے اثرات کسی کی طرف آتے ہیں تو “امرربی” یہ ہے کہ 100٪ کی بجائے صرف 30٪ اثر ہو تو اس طرح خودبخود 70٪ بد اثرات ختم ہو جائیں گے۔

                        پسند کی شادی کے لیے اللہ کے نام اور قرآن پاک کی آیتوں کی مدد لیں

2-دوسری صورت یہ ہے کہ نظر بد کے اثرات جب پہلے شخص کی طرف آئے تو “امرربی” کے مطابق 100٪ ہی اثرات ہوں تو پھر 100٪ ہی اثرات بھی ہو ں گے۔

یہاں اصل بات یہ ہے کہ اگر کوئی شخص حفاظت کے اعمال پڑھتا ہو تو خودبخود اللہ کے امر کے مطابق اس پر نظر بد کے پورے اثرات نہیں ہوں گے اور یوں اس کو “امرربی” بچا لے گا۔

یاد رکھیں عمل ہم جو بھی کرتے ہیں وہ پوری نیک نیتی سے کرنے چاہییں  پھر ہی “امرربی” ہمارے حق میں اثر کرے گا۔ اگر ہمارا  یقین مظبوط ہو گا تو اتنا ہی زیادہ “امرربی” بھی ہمیں فائدہ دے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں